Ultimate magazine theme for WordPress.

5 ایسے فائدے، جو زندگی کو پرسکون اور آسان بنادیں افیکٹو کمیونیکیشن اسکلز

بغور سننا (ایکٹو لسننگ) دراصل موثر ابلاغی مہارتوں (افیکٹو کمیونیکیشن اسکلز) کا اہم جزو ہے

162

بغور سننا (ایکٹو لسننگ) دراصل موثر ابلاغی مہارتوں (افیکٹو کمیونیکیشن اسکلز) کا اہم جزو ہے۔ توجہ سے سننے کے 5 بڑے اہم اور ایسے زبردست فائدے ہیں، جو انسان کی گھریلو، دفتری اور کاروباری زندگی کو پرسکون اور آسان بنادیتے ہیں۔ افیکٹو کمیونیکیشن اسکلز

ہم میں سے ہر کوئی چاہتا ہے کہ اسے بغور اور پوری توجہ سے سنا جائے۔ یہ اس لیے بھی اہم ہے کہ ہم میں سے اکثر کو اکثر اچھی طرح سنا نہیں جاتا۔ اس کے برعکس بھی ہوتا ہے کہ ہم اکثر دوسرے لوگوں کو پوری توجہ سے نہیں سنتے۔

آئیے اس مضمون میں لوگوں کو پوری توجہ سے سننے کے پانچ زبردست فائدے جانتے ہیں۔ افیکٹو کمیونیکیشن اسکلز

1: اعتماد اور تکریم بڑھتی ہے

اگر آپ کسی شخص کو بغور سن رہے ہیں تو اس کا مطلب یہ ہے کہ آپ ناصرف اس کی عزت کرتے ہیں بلکہ آپ اسے اہمیت بھی دیتے ہیں۔ اور یہ بھی کہ آپ اس کی باتیں سننے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔

لوگ اس وقت آپ کی جانب زیادہ متوجہ ہونا شروع ہوجاتے ہیں، جب انہیں محسوس ہوتا ہے کہ آپ پر اعتماد کیا جاسکتا ہے، لیکن یہ اسی وقت ممکن ہوتا ہے، جب آپ کسی کو پوری توجہ سے سنتے ہیں۔

بولنے والے آپ کا جیون ساتھی بھی ہوسکتا ہے، آپ کا کوئی بچہ بھی ہوسکتا ہے یا پھر آپ کا کوئی کولیگ بھی ہوسکتا ہے ، جسے ایک اچھے سامع کی ضرورت ہو، تاکہ آپ اس کی بات سن کر اس کا مسئلہ حل کرسکیں۔

2: سامنے والا سچ بولنا شروع کردیتا ہے۔

ایسی ابلاغی مہارتیں جن میں آپ کو بولنا نہ پڑھے، یہ اُس وقت بڑی مفید ثابت ہوتی ہیں، جب آپ بولنے والے کی براہ راست آنکھوں میں دیکھ رہے ہوں، یا اس کی گفتگو کے دوران آگے کو جھک کر یوں سر ہلارہے ہوں، جیسے آپ اس کی بات اچھی طرح سمجھ رہے ہیں۔

جب سامنے والے کو معلوم ہوتا ہے کہ آپ اس کی بات پوری توجہ سے سن رہے ہیں، تو پھر وہ بھی گفتگو میں پوری ایمانداری برتتا ہے اور جھوٹ نہیں بولتا۔ یاد رکھیں کہ لوگ اُسی وقت کھل کر بولتے ہیں، جب انہیں محسوس ہوکر کہ انہیں سنا جارہا ہے۔

3: بولنے والے کو سمجھنے کو موقع ملتا ہے۔

جب آپ پوری توجہ سے کسی کو سنتے ہیں تو آپ کو مقرر (بولنے والے) کے عزائم، احساسات، ضروریات، مجبوریوں اور صورتحال کو اچھی طرح سمجھنے کا موقع ملتا ہے۔ اس طرح آپ درپیش مسائل کو بھی اچھی طرح حل کرنے کے قابل ہوجاتے ہیں۔

توجہ سے سننے سے چونکہ آپ کو معاملات کو اچھی طرح سمجھنے کا موقع ملتا، اس لیے اس کے کئی مفائدے ہوتے ہیں۔ مثال کے طور پر

  • الجھنیں سلجھنے لگتی ہیں۔
  • گرہیں کھلنے لگتی ہیں۔
  • چیلنجز نمٹنے لگتے ہیں۔
  • مشکلات حل ہونے لگتی ہیں۔

4: غلط فہمیاں دور ہوجاتی ہیں۔

عموما غلط فہمیاں اس وقت جنم لیتی ہیں، جب کسی کو وضاحت کا موقع نہ ملے۔ اس لیے جب آپ کسی کو بڑی توجہ اور غور سے سنتے ہیں، یا پھر آپ کو پوری توجہ سے سنا جائے یا وضاحت اور تفصیل بیان کرنے کا پورا موقع ملے تو غلط فہمیاں دور ہونے کا زیادہ امکان ہوتا ہے۔

5: تنازعات، غصے اور مزاحمت کا خاتمہ

بزنس کنسلٹنٹ

جب ہم لوگوں سے کھل کر بات نہیں کرتے یا کھل کر بات کرنے کا موقع نہیں ملتا ہے تو پھر ہم محض اندازے اور قیافے ہی لگاتے رہتے ہیں کہ دوسرا کیا سوچ رہا ہے یا کیا محسوس کررہا ہے؟

بدقسمتی سے اس سے ناصرف غلط فہمیاں جنم لیتی ہیں بلکہ غصے، مزاحمت اور نفرت سمیت دیگر منفی احساسات بھی جنم لینے لگتے ہیں۔

جب آپ (ایکٹو لسننگ اسکلز اسمتعمال کرتے ہوئے) دوسرے کو پوری توجہ سے سنتے ہیں تو اندازوں اور مفروضوں کی بجائے آپ کو دوسرے کے حقیقی جذبات، احساسات اور خیالات کا پتہ چلتا ہے۔ اس سے لڑائی، جھگڑے، تنازعات، نفرت اور غصے کا بھی خاتمہ ہوجاتا ہے۔

Kashmala tariq

Leave A Reply

Your email address will not be published.